گلگت بلتستان این ٹی ایس کی سہولت سے تاحال محروم

Posted on Updated on

Imageپاکستان کے کسی بھی یونیورسٹی میں ماسٹر ، ایم فل اور پی ایچ ڈی میں داخلے کے لئے این ٹی ایس کا ٹیسٹ پاس کرنا لازمی قرار دیا گیا ۔اس ٹیسٹ میںسو میں سے پچاس نمبر لائے بغیر کسی بھی بڑے اعلی تعلیمی ادارے میں داخلہ نہیں مل سکتی ۔اب تک پاکستان کے 26سے زائد مختلف شہروں میںاین ٹی ایس کے ٹیسٹ سنٹرز قائم کردیئے گئے ہیں مگر گلگت بلتستان اس سہولت سے تاحال یکسر محروم تھے ۔جب اخبار میں اعلانات ہورہے ہیں کہ خطے کو صوبہ بنایا گیا ہے سکردو اور گلگت کو بگ سٹی کا درجہ دیا گیا اس سے اچھا یہ نہ ہوتا کہ صرف نام کے اعلانات کے بجائے کچھ ایسا کیا جاتا جو عملی طور پر یہاں کے عوام کی بہتری میں ہو ۔جب ملک کے 26چھوٹے بڑے شہروں میں سینکڑوں کے تعداد میں سنٹرز رکھے جاتے ہیں تو اب تک گلگت بلتستان کو اس اہم سہولت سے کیوں محروم رکھا جارہا ہے ۔دیگرحصوں کے طلباء کی طرح گلگت بلتستان کے طلباء بھی اعلی تعلیم حاصل کرنا چاہتے ہیں اور اعلی تعلیمی اداروں میں داخلے کے لئے این ٹی ایس ٹیسٹ کو پاس کرنا لازمی قرار دیا ہے لہذا صوبائی حکومت سے گزارش ہے کہ طلباء کے مسائل کو پیش نظر رکھتے ہوئے گلگت اور سکردو میں این ٹی ایس سنٹر کا قیام عمل میں لایا جائے تاکہ گلگت بلتستان کے طلباء کو ٹیسٹ کے لئے ہر تین چار ماہ بعد ایبٹ آباد اور اسلام آباد جانے کے ساتھ ساتھ ہزاروں کے اخراجات برداشت کرنا نہ پڑے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s